اتوار، 19-مئی،2024
( 10 ذوالقعدہ 1445 )
اتوار، 19-مئی،2024

EN

وزیر خزانہ نے معاشی استحکام کیلئے اداروں کی نجکاری ضروری قرار دے دیا

12 مئی, 2024 13:40

وفاقی وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نے کہا ہے کہ ملک میں معاشی استحکام کیلئے اداروں کی نجکاری ضروری قرار دے دیا۔

لاہور کے مقامی ہوٹل میں فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس کے زیر اہتمام پری بجٹ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے محمد اورنگزیب کا کہنا تھا کہ ہمارے ایجنڈے میں نجکاری شامل ہے ،اس میں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ بھی ہوگی، ایسی کوئی بات نہیں کہ ہم صرف غیر ملکی سرمایہ کاروں کو دیکھ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں ٹیکس ٹو جی ڈی پی، انرجی اور پرائیویٹائزیشن پر کام کرنا ہے، ہم نے کہیں نہ کہیں سے ٹیکس نیٹ کا آغاز کرنا ہے، تاجروں کو بھی ٹیکس نیٹ میں لانا ہے۔

مزید پڑھیں:صدر پاکستان کا آزاد کشمیر کی صورتحال پر ہنگامی اجلاس طلب

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف ٹیم پاکستان پہنچ چکی ہے، کل مذاکرات کا آغاز ہوگا، آئی ایم ایف سے 9 ماہ کا اسٹینڈ بائی معاہدہ ہوا، نگران حکومت کو بھی پورا کریڈٹ جاتا ہے، انہوں نے ذمہ داری دکھائی۔

محمد اورنگزیب نے کہا کہ ہمیں اس وقت میکرو اکنامک استحکام نظر آ رہا ہے، روپے کی قدر مستحکم اورافراط زر میں کمی آرہی ہے، حکومت صرف پالیسی دے سکتی ہے۔ حکومت کا کام پالیسی بنانا ہے جبکہ کام نجی شعبے کو کرنا ہے۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ محصولات کا ہدف 94 کھرب روپے مقرر کیا گیا ہے جب کہ کرنٹ اکاؤنٹ اور بجٹ خسارے کو ختم کرنا ہوگا، ٹیکس نیٹ کو ایک خاص نقطہ سے شروع کرنا ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ بحران سے نکلنے کے لئے نجی شعبے کو قیادت کرنی ہوگی۔

فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے زیر اہتمام پری بجٹ کانفرنس 25-2024 کا انعقاد کیا گیا جس میں وفاقی وزیر خزانہ و سینیٹر محمد اورنگزیب بطور مہمان خصوصی شریک ہوئے، صوبائی وزیر خزانہ مجتبیٰ شجاع الرحمان بھی اس موقع پر موجود تھے۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Scroll to Top