بدھ، 19-جون،2024
( 13 ذوالحجہ 1445 )
بدھ، 19-جون،2024

EN

چوری شدہ اینڈرائیڈ فونز کی فروخت روکنے کیلئے نئے فیچرز کا اعلان

16 مئی, 2024 17:14

گوگل اینڈروئیڈ فونز کیلئے نئے سیکیورٹی فیچرز متعارف کرا رہا ہے جو چوروں کو آپ کے فون کو فروخت کرنے یا آپ کے ڈیٹا تک رسائی سے روکیں گے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق گوگل کی سالانہ ڈویلپر کانفرنس میں اینڈروئیڈ ڈیوائسز کی حفاظت کے لیے چند نئے فیچرز کا اعلان کیا گیا ہے جس میں یہ فیچرز ڈیوائسز اور ڈیٹا دونوں کی حفاظت کریں گے۔

مصنوعی ذہانت (اے آئی) ٹیکنالوجی کو متعدد فیچرز کے لیے استعمال کیا جائے گا جن میں تھیف ڈیٹیکشن لاک نامی فیچر سب سے اہم ہے۔

مزید پڑھیں:گوگل کروم کا براؤزر فیچر میں مزید بہتری کرنے کا اعلان

یہ فیچر اے آئی ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے اس بات کا تعین کرتا ہے کہ کب کوئی آپ کے ہاتھ سے فون چھین رہا ہے اور بھاگ رہا ہے۔ اگر فیچر کو محسوس ہوتا ہے کہ فون چوری ہو گیا ہے تو یہ خود بخود ڈیوائس کو لاک کر دیتا ہے اور اس کے اندر موجود کسی بھی ڈیٹا تک رسائی ناممکن بنا دیتا ہے۔

ایک اور خصوصیت آف لائن ڈیوائس لاک ہے۔ یہ فیچر ڈیوائس کی سکرین کو اس وقت لاک کر دے گا جب اسے طویل عرصے تک انٹرنیٹ سے دور رکھا جائے گا یا ڈیوائس میں لاگ ان کرنے کی متعدد ناکام کوششوں کے بعد۔

اگر آپ کا فون پہلے ہی ان لاک ہے تو ، آپ ریموٹ لاک کا استعمال کرتے ہوئے ڈیوائس کی اسکرین کو لاک کرسکتے ہیں۔ کسی بھی ڈیوائس سے ایسا کرنا ممکن ہوگا، اسے صرف سیکیورٹی چیلنج پاس کرنے کی ضرورت ہوگی، یعنی گوگل اکاؤنٹ کا پاس ورڈ یاد رکھنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

گوگل ایسے ٹولز بھی تیار کر رہا ہے جو چوروں کو اینڈروئیڈ فون چوری کرنے سے روکیں گے۔ مثال کے طور پر ، اگر اینڈروئیڈ ڈیوائس کو فیکٹری کی ترتیبات میں دوبارہ ترتیب دیا جاتا ہے تو ، چور کو اسے دوبارہ کام کرنے کے لئے آپ کے آلے یا گوگل اکاؤنٹ کی تفصیلات درج کرنے کی ضرورت ہوگی۔ اگر وہ ایسا نہیں کرے گا تو فون استعمال نہیں کیا جا سکے گا۔

اس کا مطلب یہ ہے کہ ڈیٹا کو اڑانے کے بعد فون کو فروخت کرنا تقریبا ناممکن ہو جائے گا، اسی طرح فائنڈ مائی ڈیوائس سیٹنگ کو غیر فعال کرنے کے لیے اب پن یا بائیو میٹرک طریقہ کار کی ضرورت ہوگی۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Scroll to Top