بدھ، 17-اپریل،2024
( 08 شوال 1445 )
بدھ، 17-اپریل،2024

EN

پاکستان نے آئی ایم ایف قرض پروگرام کیلئے ابتدائی پلان تیار کرلیا

20 مارچ, 2024 15:02

پاکستان نے عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے تاریخی قرض پروگرام کیلئے ابتدائی معاشی پلان تیار کرلیا۔

جی ٹی وی ذرائع کے مطابق نئےقرض پروگرام کےحجم اور دورانیہ کوتاحال حتمی شکل نہیں دی گئی، نیا قرض پروگرام 3 سال یا اس سے زائد عرصے کیلئے ہوسکتا ہے
ذرائع وزارت خزانہ کے مطابق نیاقرض پروگرام 6 سے 8 ارب ڈالرز کا ہوسکتا ہے، پلان کے تحت ایف بی آرمیں اصلاحات کی جائیں گی، ٹیکس نیٹ بڑھایا جائے گا،31لاکھ ریٹیلرز کو ٹیکس نیٹ میں لانے کیلئےپلان بنایاگیا۔

ریئل اسٹیٹ اور زرعی شعبے سے ٹیکس کی وصولی ترجیحات میں شامل ہوگا، جو شعبے ٹیکس نیٹ میں نہیں ہیں ان کو ٹیکس نیٹ میں لایا جائے گا، ٹیکس فائلرز کی تعداد اور ریونیو میں اضافے کیلئے پلان بنایا گیا۔

15سے20 لاکھ نئے ٹیکس دہندگان کو ٹیکس نیٹ میں لانے پر کام ہورہا ہے، ٹیکس نیٹ وسیع اورٹیکس ٹو جی ڈی پی تناسب کو بڑھانے پرکام کیا جائے گا، ٹیکس دہندگان کی تعداد بڑھا کر محصولات کوبڑھایاجائے گا۔
پلان کے تحت ٹیکنالوجی میں سرمایہ کاری کے ذریعےٹیکس نیٹ بڑھانے پر کام کیا جائے گا، حکومت گیس شعبے میں اصلاحات اورسستی توانائی پلان پر کام کررہی ہے۔
حکومتی ذرائع کے مطابق درآمد پر انحصارکم اورمقامی وسائل سےپیداوار بڑھانا ترجیح ہے، مقامی آئل ریفائنریزسےپیداوار بڑھانےکےپلان پرکام ہورہا ہے، مقامی ریفائنریزکی اپ گریڈیشن سےساڑھے6 ارب ڈالرزسرمایہ کاری متوقع ہے۔
پلان کے تحت بجلی کی تقسیم اورترسیل کانظام بہتر بنایاجائے گا، توانائی شعبے کےسرکلرڈیٹ میں اضافہ نہیں ہونےدیا جائے گا، بجلی تقسیم کار کمپنیوں کو نجی شعبے کے حوالے کیا جائے گا،خسارے میں جانے والے سرکاری اداروں کی نجکاری کی جائے گی۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Scroll to Top