بدھ، 19-جون،2024
( 13 ذوالحجہ 1445 )
بدھ، 19-جون،2024

EN

’ہیٹ ویو سے حاملہ خواتین کو زیادہ خطرہ لاحق ہوتا ہے‘

27 مئی, 2024 11:48

اسلام آباد: موسمیاتی تبدیلی کی وزارت نے خبردار کیا ہے کہ پاکستان میں حاملہ خواتین کو ہیٹ ویو سے زیادہ خطرہ ہو سکتا ہے۔

رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ گلوبل وارمنگ نے حالیہ برسوں میں پاکستان میں مہلک ہیٹ ویو کے خطرے میں اضافہ کیا ہے۔

وزارت موسمیاتی تبدیلی کے ترجمان محمد سلیم شیخ نے خبردار کیا ہے کہ حاملہ خواتین کو ہیٹ ویو سے زیادہ خطرہ ہے، کمزور مدافعتی نظام کی وجہ سے بچوں، بزرگوں اور خواتین کے لیے صورتحال مزید پریشان کن اور سنگین ہوسکتی ہے۔

مزید پڑھیں:خواتین کو ای سیگریٹس کے استعمال سے کیا نقصانات ہوسکتے ہیں؟

وزارت موسمیاتی تبدیلی کے ترجمان نے مزید کہا کہ عوام ہر ممکن طریقے سے خود کو تکلیف دہ صحت کے مسائل سے محفوظ رکھیں، خاص طور پر صبح 11 بجے سے سہ پہر 3 بجے تک گرم اوقات میں غیر ضروری بیرونی سرگرمیوں سے گریز کریں۔

محمد سلیم شیخ نے کہا کہ اگرچہ ہیٹ ویو سے کوئی بھی متاثر ہوسکتا ہے ، لیکن حاملہ خواتین کو زیادہ خطرہ ہوتا ہے ، لہذا یہ ضروری ہے کہ وہ زیادہ درجہ حرارت کے دوران باہر جانے سے گریز کریں۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Scroll to Top