منگل، 16-اپریل،2024
( 07 شوال 1445 )
منگل، 16-اپریل،2024

EN

نوازشریف کی میڈیکل رپورٹ میں ایسی تجویز نہیں آئی کہ انہیں علاج کیلئے باہر بھیجا جائے

31 جولائی, 2018 21:51

اسلام آباد: سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ نواز کے قائد نواز شریف کے اصرار پر انہیں پمز اسپتال سے اڈیالہ جیل منتقل کیا جارہا ہے۔

 نواز شریف کی جانب سے فوری اڈیالہ جیل منتقل کیے جانے کے مطالبے کے بعد انہیں سخت سیکیورٹی میں جیل منتقل کیا جارہا ہے۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ ڈاکٹرز کا مشورہ تھا کہ نواز شریف مزید کچھ روز اسپتال میں قیام کریں تاہم سابق وزیراعظم کا اصرار تھا کہ انہیں جیل منتقل کیا جائے۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی حالت ابھی بھی مستحکم نہیں اور ان کے مختلف ٹیسٹوں میں نتائج مختلف آرہے ہیں۔

خیال رہے کہ نواز شریف کو سینے میں تکلیف کے باعث اتوار کو پمز اسپتال کے کارڈک سینٹر منتقل کیا گیا تھا۔

نگران وزیر داخلہ پنجاب شوکت جاوید نے کہا ہےکہ نوازشریف کی میڈیکل رپورٹ میں ایسی تجویز نہیں آئی کہ انہیں علاج کیلئے باہر بھیجا جائے۔

لاہور میں میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئے شوکت جاوید نے کہا کہ نواز شریف کو ڈاکٹروں کی ہدایات پرپمز اسپتال میں رکھا گیا ہے، جب تک ڈاکٹرز کہیں گے نوازشریف اسپتال میں رہیں گے۔

انہوں نےکہا کہ نواز شریف نے اسپتال جانے میں ہچکچاہٹ کا مظاہرہ کیا، پاکستان میں ہر طرح کا علاج موجود ہے، پاکستان میں دل کے امراض کا بھی بہت اچھا علاج ہوتا ہے، میڈیکل رپورٹ میں ایسی تجویز نہیں آئی کہ نوازشریف کو علاج کیلئے باہر بھیجا جائے۔

نگران وزیر داخلہ کا کہنا تھاکہ نواز شریف کی رپورٹیں بہتر ہیں اور مرض کی ہسٹری بنوانا آج کل کوئی مشکل کام نہیں۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Scroll to Top