جمعہ، 19-جولائی،2024
( 13 محرم 1446 )
جمعہ، 19-جولائی،2024

EN

سانحہ کوئٹہ کو دوسال مکمل

08 اگست, 2018 12:37

سانحہ 8 اگست 2016  کے خلاف کوئٹہ سمیت بلوچستان بھر میں وکلاء کی جانب سے ہڑتال اور شہداء کیلئے فاتحہ خوانی کی جارہی ہے، شہر میں شٹر ڈاون ہڑتال کی گئی ہے.

سانحہ 8 اگست 2016  کے خلاف کوئٹہ سمیت بلوچستان بھر میں وکلاء کی جانب سے ہڑتال اور شہداء کیلئے فاتحہ خوانی کی جارہی ہے، شہر میں شٹر ڈاون ہڑتال کی گئی ہے.

8 اگست 2016 کی صبح  دہشت گردوں نے  بلوچستان بار ایسوسی ایشن کے صددبلال کا سی  کو ان کے گھر کے قریب فائرنگ کرکے شہد کردیا تھا جب ان کی شہادت کی خبر پھیلی تو وکلاء برادری  اور میڈیا نمائندوں کی بڑی تعداد سول ہسپتال پہنچنا شروع ہوگئی۔

جہاں ایک خود کش حملہ آوار  پہلے سے ہی موجود تھا, بارکے صدر بلال کاسی کی میت گھر لے جانے کے لیے وکلاء کی بڑی تعداد اسپتال میں جمع ہوچکی  تھی اسی اثنا میں خودکش بمبار نے خود کو اڑا دیا.

شعبہ سول ہسپتال کے احاطہ میں اس خودکش دھماکہ میں 70 سے زائد افراد  شہید ہوئے جن میں بلوچستان کے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے 50 سے زائد وکلا اور 2 صحافی شامل تھے۔۔

دھماکے میں150 سے زائد افرادزخمی بھی ہوئے جن میں صحافیوں سمیت وکلاء کی بڑی تعداد شامل تھیں، شہید وکلا میں سینئر رہنما باز محمد کاکڑ ایڈوکیٹ ، بریسٹ عدنان کاسی ، قاہر شاہ ایڈوکیٹ، داود کاسی ایڈوکیٹ، چاکر رند ایڈوکیٹ شامل تھے.

جبکہ خودکش دھماکے میں نجی چینل کے 2 کیمرہ مین شہزاد خان اور محمود خان بھی شہید ہوئے تھے، سانحہ 8 اگست بلوچستان کے لیے ایک سیا ہ دن کے طور پر یاد کیا جاتاہے، وکلاء ہر سال صو بے بھر میں عدالتی بائیکاٹ جبکہ سیاسی و کاروباری تنظیموں کی جانب سے شٹرڈوان ہڑتال کی جاتی ہے۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Scroll to Top